Pak Updates - پاک اپڈیٹس
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

پچھوں کردا پھراں ٹکور ۔۔۔۔۔۔

اقتدار کی گلی میں وہ کیلا ضرور آتا ہے جس سے بندے نے سلپ ہونا ہی ہوتا ہے۔ فیاض الحسن چوہان ہوئے اب لگتا ہے وسیم اکرم ثانی کی باری ہے۔ ارکان پنجاب اسمبلی نے تو اپنی طرف سے غربت کے خاتمے کے منصوبے پر عمل کیا۔ کیونکہ اندھا ہمیشہ اپنوں میں ریوڑیاں بانٹتا ہے۔ بس یہ غلطی ہوئی کہ وسیم اکرم پارٹ ٹو یہ سمجھے کہ ’’گھبر کھس ہوگا ساباس دیگا‘‘۔ شاید وہ یہ نہیں جانتے تھے کہ عمران خان وہ موگیمبو ہیں جو کبھی خوش نہیں ہوتے۔ ان کے لئے وسیم اکرم کھبے سجے کرنا کوئی اتنا مشکل کام نہیں، اس کے لئے تو انہوں نے یوٹرن ٹیکنالوجی تیار کی ہے۔ چلیں پاکستان میں50لاکھ گھر بنیں نہ بنیں وزیراعلیٰ کو لاہور میں تاحیات جھگی ضرور مل جائے گی۔ 2500سی سی کی چنگ چی اور ’’پنج ست‘‘ سیکورٹی گارڈ بھی ملیں گے

اب اس سے بڑی تبدیلی اور کیاآنی ہے۔ میں تو سمجھتا ہوں کہ پنجاب اسمبلی کے ارکان سب سے زیادہ بالغ نظر ہیں۔ جیسے ہی وزیرخزانہ نے ’’چتاونی‘‘ دی کہ مہنگائی اتنی بڑھے گی کہ لوگ باں باں کر اٹھیں گے۔ پنجاب اسمبلی کے ارکان نے اپنے گھر کے سامنے ڈکا لگا دیا۔ رہی عوام تو اس نے جی کے کونسا آسکر ون کرلینا ہے۔

اصل زندگی تو پنجاب اسمبلی کے غریب ارکان کی ہے سنتا سنگھ اپنی محبوبہ کے ساتھ چپس کھا رہے تھے وہ بولی سو ہنیو کیا سوچ رہے ہو وہ بولا سوچداں ہوں تو میرے توں تیز کھا رہی ہیں، ہم کون سے سنتے بنتے سنگھ ہیں جو اتنا بھی سوچ لیں۔ اس لئے پوری قوم ’’کن وٹ‘‘ کر بیٹھی ہے۔ اچھا ہے جو بولے گا اس کے کن تھلے وجے گی۔ 70سال سے یہی باندرکلا کھیلا جا رہا ہے۔ شاہ صاحب مجمع سے خطاب کرتے ہوئے بولے اس جگہ نہیں جانا چاہئے جہاں بندے کی عزت نہ ہو، سنتا سنگھ بولا لے ہن اسی اپنے گھر وی نہ جائیے۔ بھائی اس ملک میں اس کی اسمبلیوں میں اسکے اداروں میں ہمارا جتنا مرضی چھتر پولاھو ہم کیا کریں۔ اب اس ملک کو تو نہیں چھوڑ سکتے۔

ہمارے آباؤ اجداد مر کھپ گئے اس ظلم کے نظام میں صبرکی چوسنی اور وعدوں گا گرائپ واٹر پیتے ہم بھی مر کھپ جائیں گے۔ ورنہ ہونا تو یہ چاہئے تھا کہ کم ازکم پنجاب میں اس فیصلے کے خلاف احتجاجی ریلیاں نکلتیں، مظاہرے ہوتے، لیکن ہم وہ قوم ہیں جو لائن میں صرف اس بات پر احتجاج کرتے ہیں کہ ہمیں چھتر مارکر فارغ کیا جائے تاکہ ہم جلد فارغ ہوں۔ بابا جی سے کسی نے پوچھا بابا جی بیوی کو فارسی میں کیا کہتے ہیں وہ بولے پتر بیوی کو کسی زبان میں بھی کچھ نہیں کہتے۔ ارکان ابھی ہماری بیویاں تو نہیں لیکن ان سے کم لاڈلے بھی نہیں، لیکن افسوس پوری دنیا میں صرف پاکستانی زبان میں انہیں کچھ نہیں کہا جاتا کیونکہ بھیر ابوذری کہتے ہیں۔

پلس نوں آکھاں رشوت خورتے فیدہ کی

پچھوں کرداں پھراں ٹکور تے فیدہ کی

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More