Pak Updates - پاک اپڈیٹس
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

وزیر خزانہ کا افراط زر کے تعین پر محکمہ شماریات سے اختلاف

اسلام آبا( شہباز رانا ) وفاقی حکومت محکمہ شماریات کی جانب سے افراط زر کی شرح کا تعین کرنے کے طریقہ کار پر پھٹ پڑی۔ وزیر خزانہ اسد عمر نے ایکسپریس ٹریبون کو بتایا کہ مارچ
کے مہینے کی مہنگائی رپورٹ پیش کرتے وقت محکمہ شماریات نے غلط اعداد و شمار پیش کیے اور پرائس انڈکس تقریبا ایک اعشاریہ دوفیصد زیادہ بڑھا کر دکھایا گیا جس کی وجہ سے تحریک انصاف کی حکومت کوا پوزیشن جماتوں کے سامنے خفت اٹھانی پڑی اور شدید عوامی ردعمل کا سامنا کرناپڑا۔ محکمہ شماریات نے مارچ کے مہینے کے لیے مہنگائی کی شرح کا تناسب 9.41 فیصد لگایا جو کہ حکومت کے مطابق بیورو کی جانب سے اپلائی کیے گئے غلط اصول کی بدولت ہوا ۔ یہ بات وزیر خزانہ اسد عمر نے ایکسپریس ٹریبون کو کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کے بعد بتائی ۔ اقتصادی رابطہ کمیٹی نے اجلاس مین محکمہ شماریات کی جانب سے مہنگائی کے حوالے سے جاری رپورٹ پر بریفنگ لی جس مین بتایا گیا کہ کنزیومر پرائس انڈکس کے پیمانہ کے مطابق گزشتہ ماہ مہنگائی کی شرح 9.41 فیصد رہی جو گزشتہ پانچ سال کے دوران بلند ترین سطح ہے۔ اقتصادی رابطہ کمیٹی نے محکمہ شماریات کے طریقہ کار پرناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے ایک تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی ہے جو محکمہ شماریات کے مجوزہ طریقہ کار پر تفصیلی رپورٹ پیش کرکے حکومت کو اصل حقائق سے آگاہ کرے گی۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More