Pak Updates - پاک اپڈیٹس
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

سوشل میڈیا پر خواتین کو ہراساں کرنیکی شکایات میں اضافہ

کراچی( رپورٹ ) عادل جواد ، حسین دادا) سوشل میڈیا پر خواتین کو ہراساں کرنے کی شکایات میں اضافہ ہواہے ۔ ایف آئی اے سائبر کرائم سرکل کراچی کے ڈپٹی ڈائریکٹر عبدالغفار نے بتایا کہ زیادہ تر شکایات سوشل میڈیا ویب سائٹ فیس بک سے متعلق ہوتی ہین جبکہ تقریبا 70 فیصد شکایات ہراساں کرنے کی ہیں اوران مین نوے فیصد شکایات خواتین کی ہیں،گزشتہ سال ایف آئی آے کو ہراساں کرنے کی چار ہزار سے زائد شکایات موصول ہوئیں اور رواں سال کے پہلے تین ماہ کے دوران پندرہ سو سے زائد شکایات مل چکی ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ زیادہ تر شکایات کرنے والے خاندان یا متاثرہ فریق معاملے کو عدالت میں لے جانے سے پہلے ہی ختم کردیتے ہیں اور اس کی بنیادی وجہ معاشرے میں اپنی اور اپنے خاندان کی ساکھ خرا ب نہيں کرنا چاہتے ، خواتین کی جانب سے ہراساں کیے جانے کی نوے فیصد شکایات کرنے والے افراد اپنی شکایت ملزم کی جانب سے معافی نامہ لکھنے ، تصاویر سوشل میڈیا سے ہٹانے اور آئندہا یسی کرکت نہ کرنے کی یقین دہانی پر واپس لے لی جاتی ہیں صرف دس فیصد شکایات عدالت مین قانونی کارروائی کے لیے لے جائی جاتی ہیں۔سائبر کرائم سرکل میں موجودایک متاثرہ لکڑی نے بتایا کہ اس کے سابقدوست نے فیس بک پر اس کی قابل اعتراض تصاویر اپ لوڈ کردی تھیں جس پر اس نے نیند کی گولیاں کھا کر خودکشی کی کوشش کی ۔اس نے اپنے خاندان کو اعتماد میں لے کر ایف آئی اے سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا۔ سائبر کرائم سیل کے ٹیکنیکل اہلکار طارق حسین نے بتایا کہ سائبر کرائم کی شرح میں تیزی سے اضافے ہو رہاہے تاہم ایف آئی اے س ائبر کرائم سیل انسانی اور مالی وسائل مکمل طورپر محروم دکھائی دیتا ہے۔ سائبر کرائم ونگ کراچی کاقیام 2007 مین عمل میں آیا اس کے بعد سے اب تک تکنیکی آلات کو اپ گریڈ کیا گیا ۔ نہ فرانزک لیب اورکمپیوٹر سافٹ ویئر تبدیل ہوئے ۔ پولیس افسران سائبرکرائم ونگ کے اہم انتظامی عہدوں پر فائز ہیں جبکہ ان میں بڑی تعداد آئی ٹی کے شعبے سینابلد ہے ۔ تربیتی کورسز کے لیے سائبر ماہرین کے بجائے انتظامی افسران کو سرکاری خرچ پر بیرون ملک بھیج دیا جاتا ہے۔ غیر تکنیکی انتظامی افسران کی وجہ سے آج تک ایف آئی اے سوشل میڈیا ویب سائٹس اور ایلیکیشنز کے ساتھ معاہدے کرنے میں ناکام رہا ہے ۔ اوریہایک بڑی وجہ ہے کہ مقدمات کی تفتیش تاخیر کا شکار ہوتی ہے

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More