Pak Updates - پاک اپڈیٹس
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم سے غیر قانونی سگریٹ کی سپلائی کم ہو گی

اسلام آباد( خصوصی رپورٹر) ملک میں سگریٹ ساز ملٹی نیشنل کمپنیوں کا کہناہے کہ فیڈرل بورڈ ریونیو کی جانب سے سگریٹ ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم سے غیر قانونی سگریٹ کی سپلائی کم ہو گی
اسلام آباد( خصوصی رپورٹر) ملک میں سگریٹ ساز ملٹی نیشنل کمپنیوں کا کہناہے کہ فیڈرل بورڈ ریونیو کی جانب سے سگریٹ کی پیدوار سپلائی کی الیکٹرانک مانیٹرنگ کے لیے ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم متعارف کروانے سے غیر قانونی سگریٹ کی سپلائی کی حوصلہ شکنی ہوگی تاہم فیڈرل بورڈ آف
ریونیو کویقینی بنانا ہو گا اس سے قبل جعلی اور سمگل شدہ سگریٹس کی روک تھام کے لیے موثر انفورسٹمنٹ کی وجہ سے جعلی وسمگل شدہ سگریٹ کے مارکیٹ شیئر میں تیزی سے کمی آرہی تھی اور جعلی اسمگل شدہ سگریٹ کامارکیٹ شیئر کم ہو کر 33 فیصد رہ گیاہے مگر کچھ عرے سے انفورسٹمنٹ روک دی گئی ہ ہے جس کی وجہ سے جعلی و سمگل شدہ سگریٹ کامارکیٹ شیئر بھی 33 فیصد پر ہی رکا ہواہ ے ۔ اس ضمن میں پاکستان ٹوبیکو اینڈ کمپنی(پی ٹیس ی ) کے افسران مدیح پاشا اور نور آفتاب نے سگریٹ سازی سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ملک کے ریونیو میں اضافہ اور غیر قانونی سگریٹ کی حوصلہ شکنی کے لیے تمباکو مصنوعات پر عائد فیڈرل ٹیکس ڈیوٹی کی مد میں تھرڈ سلیب کا تسلسل ناگزیر ہے تیسرے سیلب کے نفاذ سے تمباکو مصنوعات کی غیر قانونی تجارت میں ملوث کاروباری طبقے کی حوصلہ شکنی ہوگی۔ حکومت ملک میں موجود تمباکو قوانین کانفاذ ممکن بنانے اور غیر قانونی سگریٹ کے دھندے کے خلاف کارروائی کرے اورپ اکستان میں مجموعی طورپر 80 ارب روپے کی سگریٹس سٹیکس بنتی ہیں جس میں دو ملٹی نیشنل کمپنیاں کا مارکی249ٹ شیئر 67 فیصد ہے اور وہ98 فیصد ٹیکس ادا کرتی ہیں جبکہ 33 فیصد مارکیٹ شیئر رکھنے والی کمپنیاں صرف دو فیصد ٹیکس ادا کرتی ہین جن میں لوکل سطح پر سگریٹس کی کمپنیاں سمگل شدہ سگریٹس اور آزادکشمیر سمیت دیگر گرے ایریا میں موجود یونٹس شامل ہیں ۔ ایسی کمپنیوں کے 2 سو سے زائد برانڈ موجود ہیں جو قوانین کی مسلسل خلاف ورزی ر ہی ہیں۔ 2016-17 میں غیر قانونی سگریٹس کی بھرمار کی وجہ سے ملک کا ریونیو 37 ارب روپے کی کمی ہوئی جو کہ کم ہو کر 74 ارب ہو گیا ۔ ایف بی آر نے تھرڈ لیئر متعارف کرایا جس کی وجہ سے مالی سال 2017-18 میں سگریٹس کی مد میں غیر ملکی ریونیو 89 ارب روپے تک پہنچ گیا اور رواں مالی سال 2018 میں ریونیو 115 ارب روپے تک پہنچ جائے گا۔
کی پیدوار سپلائی کی الیکٹرانک مانیٹرنگ کے لیے ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم متعارف کروانے سے غیر قانونی سگریٹ کی سپلائی کی حوصلہ شکنی ہوگی تاہم فیڈرل بورڈ آف
ریونیو کویقینی بنانا ہو گا اس سے قبل جعلی اور سمگل شدہ سگریٹس کی روک تھام کے لیے موثر انفورسٹمنٹ کی وجہ سے جعلی وسمگل شدہ سگریٹ کے مارکیٹ شیئر میں تیزی سے کمی آرہی تھی اور جعلی اسمگل شدہ سگریٹ کامارکیٹ شیئر کم ہو کر 33 فیصد رہ گیاہے مگر کچھ عرے سے انفورسٹمنٹ روک دی گئی ہ ہے جس کی وجہ سے جعلی و سمگل شدہ سگریٹ کامارکیٹ شیئر بھی 33 فیصد پر ہی رکا ہواہ ے ۔ اس ضمن میں پاکستان ٹوبیکو اینڈ کمپنی(پی ٹیس ی ) کے افسران مدیح پاشا اور نور آفتاب نے سگریٹ سازی سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ملک کے ریونیو میں اضافہ اور غیر قانونی سگریٹ کی حوصلہ شکنی کے لیے تمباکو مصنوعات پر عائد فیڈرل ٹیکس ڈیوٹی کی مد میں تھرڈ سلیب کا تسلسل ناگزیر ہے تیسرے سیلب کے نفاذ سے تمباکو مصنوعات کی غیر قانونی تجارت میں ملوث کاروباری طبقے کی حوصلہ شکنی ہوگی۔ حکومت ملک میں موجود تمباکو قوانین کانفاذ ممکن بنانے اور غیر قانونی سگریٹ کے دھندے کے خلاف کارروائی کرے اورپ اکستان میں مجموعی طورپر 80 ارب روپے کی سگریٹس سٹیکس بنتی ہیں جس میں دو ملٹی نیشنل کمپنیاں کا مارکی249ٹ شیئر 67 فیصد ہے اور وہ98 فیصد ٹیکس ادا کرتی ہیں جبکہ 33 فیصد مارکیٹ شیئر رکھنے والی کمپنیاں صرف دو فیصد ٹیکس ادا کرتی ہین جن میں لوکل سطح پر سگریٹس کی کمپنیاں سمگل شدہ سگریٹس اور آزادکشمیر سمیت دیگر گرے ایریا میں موجود یونٹس شامل ہیں ۔ ایسی کمپنیوں کے 2 سو سے زائد برانڈ موجود ہیں جو قوانین کی مسلسل خلاف ورزی ر ہی ہیں۔ 2016-17 میں غیر قانونی سگریٹس کی بھرمار کی وجہ سے ملک کا ریونیو 37 ارب روپے کی کمی ہوئی جو کہ کم ہو کر 74 ارب ہو گیا ۔ ایف بی آر نے تھرڈ لیئر متعارف کرایا جس کی وجہ سے مالی سال 2017-18 میں سگریٹس کی مد میں غیر ملکی ریونیو 89 ارب روپے تک پہنچ گیا اور رواں مالی سال 2018 میں ریونیو 115 ارب روپے تک پہنچ جائے گا۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More