Pak Updates - پاک اپڈیٹس
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

اسد عمر فارغ فواد سمیت کئی وفاقی وزرا کے قلمدان تبدیل

اسلام آباد ( خصوصی نیوز رپورٹر،سپیشل رپورٹر،این این آئی،صباح نیوز، 92 نیوز رپورٹ) وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ میں بڑے پیمانے پر رد وبدل کیا ہے ، وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر کو فارغ کر دیا گیا ہے ۔ ترجمان وزیرا عظم آفس کی طرف سے جاری اعلامیہ میں کہا گیاہے کہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کو مشیر خزانہ بنایاگیاہے جبکہ فواد چودھری وزیر سائنس اینڈٹیکنالوجی ہونگے ، غلام سرور خان وزیر ایوی ایشن ، محمد میاں سومرو سے ایوی ایشن کا اضافی قلم دان واپس لے لیا گیاہے انہیں وفاقی وزیر نجکاری جبکہ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوا ن کو معاون خصوصی اطلاعات لگایا گیا ہے ۔ اعلامیہ کے مطابق اعظم سواتی کو پارلیمانی امور کا قلم دان سونپا گیا ہے جبکہ اعجاز شاہ کو وزیرداخلہ بنایا گیا ہے اورشہر یار ا ٓفریدی کو وزیرمملکت برائے سیفران ہونگے ۔ ظفر اﷲ مرزا کو وزیراعظم کا معاون خصوصی برائے نیشنل ہیلتھ ندیم بابر وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے پٹرولیم و قدرتی وسائل ہونگے ۔ قبل ازیں اسد عمر نے جمعرات کواپنے ٹویٹ میں وزارت چھوڑنے کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہاوزیر اعظم چاہتے تھے میں وزارت خزانہ کے بجائے وزارت توانائی کا قلمدان لے لوں تاہم میں نے وزیر اعظم کو اس بات پر راضی کر لیا کہ میں کوئی بھی وزارت نہیں لوں گا۔ میرا یقین ہے عمران خان پاکستان کی واحد امید ہیں اور انشااﷲ نیا پاکستان ضرور بنے گا اورعمران خان ہی نیا پاکستان بنائیں گے ۔ بعدازاں پریس کانفرنس میں اسد عمر نے باضابطہ طورپر وزارت چھوڑ نے کااعلان کرتے کہا نئے وزیر خزانہ سے کوئی یہ توقع نہ کرے کہ معجزے ہوں گے اور اگلے تین ماہ میں دودھ اور شہد کی ندیاں بہنے لگیں گی، آئی ایم ایف میں جارہے ہیں، آئندہ بجٹ پر آئی ایم ایف پروگرام کا اثر پڑے گا، بجٹ مشکل ہوگا،نئے وزیر خزانہ ایک مشکل معیشت سنبھالیں گے ،بہتری کی طرف جارہے ہیں صرف تھوڑا صبر کر نے کی ضرور ت ہے اگر مشکل فیصلے نہ کئے گئے تو دوبارہ کھائی میں گر سکتے ہیں ، معیشت کی بنیادی چیزوں کو درست نہیں کرینگے تو معاشی ترقی نہیں ہو گی، تحریک انصاف کو خیر باد نہیں کہہ رہا،عمران خان نیا پاکستان بنائے گا،نئے پاکستان کے لئے میری خدمات کرسی پر منحصر نہیں تھی۔ کابینہ سے الگ ہونے کا مقصد یہ بالکل نہیں کہ میں عمران خان کے ساتھ نہیں، میں ان کے نیا پاکستان کے وژن کو سپورٹ کرنے میں ہمیشہ ساتھ ہوں۔ وزیراعظم کے بعد مشکل ترین عہدہ وزیر خزانہ کا ہے ۔ مجھے کسی سازش کا معلوم نہیں،جو سازشیں کررہا ہے وہ کرے ، سازشوں جیسے معاملات میں نہیں پڑتا۔ مجھے معلوم نہیں پی ٹی آئی کمزور ہو گی یا مضبوط،میں صرف کام کرنے کیلئے آیا تھا۔ کپیٹل مارکیٹ اور بنکوں کوچلانا صرف وزیر خزانہ کی ذمہ داری نہیں۔نئی ٹیم کے آنے سے حکومت کی کارکردگی بہتر ہو گی۔ وزیراعظم بہتری چاہتے ہیں اس لئے تبدیلی آ رہی ہے ۔ آئی ایم ایف سے بہت بہتر شرائط پر معاہدہ ہوا ہے ۔ میں پہلے بھی عمران خان کے لئے حاضر تھا آج بھی حاضر ہوں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More