Pak Updates - پاک اپڈیٹس
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

سابقہ ادوار میں شروع منصوبوں کی لاگت میں945ارب اضافہ

اسلام آباد (ملک سعیداعوان) سابقہ حکومتوں کی جانب سے شروع کئے گئے ترقیاتی منصوبوں میں سے 134منصوبوں کی لاگت میں 945ارب 22کروڑ 22لاکھ روپے کے اضافے کا انکشاف ہوا ہے ، لاگت میں اضافہ تکنیکی خامیوں کی وجہ سے ہوا ۔ سب سے زیاد ہ نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کی لاگت میں 389ارب 6کروڑ 81لاکھ روپے کی لاگت کا اضافہ ہو اجبکہ کچھی کینال منصوبے پر 49ارب 14کروڑ80لاکھ ، منگلا ڈیم کی توسیع کے منصوبے پر 34ارب 30کروڑ 20لاکھ ،بارشوں کی وجہ سے این ایچ اے نیٹ روک کی بحالی کے منصوبے کی لاگت میں 26ارب 29کروڑ 70لاکھ ، ریلوے کے 75 ڈیزل الیکٹرک لوکوموٹوز کے منصوبے پر 32ارب 79کروڑ 59لاکھ روپے لاگت میں اضافہ ہوا ۔ روزنامہ 92نیوز کو دستیاب دستیاو یز کے مطابق نیو گوادر ائیر پورٹ کی لاگت میں 14ارب 57کروڑ 24لاکھ ، لواری روڈ ٹنل اینڈ ایکسیس روڈ منصوبے کی لاگت میں 18ارب 86کروڑ 80لاکھ ، نیشنل ہائی وے ڈویلپمنٹ سیکٹر پروجیکٹ کے 9منصوبوں کی بہتری وبحالی پر 18ارب 71کروڑ 27لاکھ ،گولن گو ل ہائیڈرو پاور پروجیکٹ 22ارب 4کروڑ 20لاکھ اور کیال کھاوڑ ہائیڈرو پاور پروجیکٹ کی لاگت 19ارب 1کروڑ 71لاکھ روپے بڑھی ۔ اس وقت حکومت کی جانب سے 822ترقیاتی منصوبوں پر کام ہو رہاہے ۔ کل منصوبوں میں سے 134منصوبے ایسے ہیں جن کی لاگت میں اضافہ ہوا ۔لاگت میںاضافے کی وجوہات خراب ابتدائی ڈیزائن ، منصوبہ پر کام کے دوران کی جانے والی تبدیلیاں ، مالی مشکلات ، ٹھیکیداروں کی کم صلاحیت اور غیر ملکی کرنسی کی قیمت میں اتار چڑھاو بتائی گئی ہیں

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More