Pak Updates - پاک اپڈیٹس
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

سخت چیکنگ ،نئی بارڈ رمینجمنٹ سٹریٹیجی متعارف کرانے کافیصلہ

اسلام آباد( ارشاد انصاری ) فیڈرل بورڈ آف ریونیو ( ایف بی آر) فٹیف ایکشن پلان پر عملدرآمد کے تحت اہداف کے حصول کو یقینی بنانے کے لیے منی لانڈرنگ اور سمگلنگ کی روک تھام کے لیے طور’م بارڈر اور کرتار پور کوریڈور پر 24 گھنٹے چیکنگ و مانیٹرنگ سخت کرنے کے لیے نئی بارڈر مینجمنٹ سٹرٹیجی متعارف کروانے کا فیصلہ کیا ہے جس کے تحت کسٹمز ڈیپازٹ کی موجودہ اسٹیبلشمنٹ کو از سر نو انفورس کرنے اور کسٹمز کے لیے نئی فیلڈ فارمشنز قائم کرنے کے ساتھ ساتھ نئی آسامیاںپیدا کرنے اور اس کے لیے الگ سے بجٹ مختص کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے لیی ایف بی آر نے بارڈر مینجمنٹ سٹریٹجی پیپر تیار کرکے منظوری کے لیے حکومت کوبھجوا دیا ہے وزیراعظم کے مشیر برائے اسٹیبلشمنٹ کو مداخلت کرنے درخواست کردی ہے اس ضمن مین ایکسپریس کو دستیاب دستاویز کے مطابق فیڈرل بورڈ اف ریونیو کی جانب سے وزیراعظم کے مشیر برائے اسٹیبلشمنٹ شہزاد ارباب کو بھجوائے جانے والے ایڈوانس نوٹ مین درخواست کی گئی ہے کہ بارڈر مینجمنٹ سٹریٹجی پیپر عملدرآمد اور اس کے تحت طورخم بارڈر اور کرتار پورہ راہداری پر 7/24 آپریشنل سرگرمیاں جاری رکھنے کے علاوہ مانیٹرنگ ، چیکنگ اور انفورسٹمنٹ سخت کرنے کی تجویز کردہ نئے فارمشنز اور اس حساب سے درکار افرادی قوت کے لیے نئی آسامیاں پیدا کرنے سے متعلق معاملات کے حوالے سے ایف بی آر ، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن اور خزانہ ڈویژن کے حکام کے درمیان ملاقات کا انتظام کیا جائے اورا س حوالے سے خصوصی ڈآئریکٹو جاری کیا جائے گا۔ وزیراعظم کے مشیر برائے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو لکھے جانے والے نوٹ میں کہا گیا ہے کہ نئی بارڈر مینجمنٹ سٹریٹجی پیپر کے تحت کسٹمز ڈیپازٹمنٹ کی حکام کی عصر حاضر کے جدید تقاضوں کے مطابق تربیت ،لاجسٹکس اور انفراسٹرکچر کو سپورٹ کے ذریعے کسٹمز ڈیپارٹمنٹ مزید مضبوط وبااختیار بنانے کی ضرورت ہے جس کیلیے مزید فارمشنز قائم کیے جائیں اور فارمشنز کے حساب سے درکار ضروریات اور افرادی قوت کے مطابق کسٹمز ڈیپارتمنٹ کے لیے درکار نئی آسامیاں منظور کی جائیں اور بارڈر مینجمنٹ سٹریٹجی پر عملدرآمد کے لیے آنے والی لاگت کا تخمینہ لگا کر بجٹ مختص کیا جائے تاکہ کسٹمز ڈیپازٹمنٹ منی لانڈرنگ کی روک تھام اور سمگلنگ کی روک تھام کے لیے 7/24 مانیٹرنگ ،چیکنگ ، انفورسٹیمنٹ کو یقینی بنا سکے اور بارڈر ایریاز میں کرنسی کی نقل وحمل کو مانیٹر کرکے کرنسی کی سمگلنگ روکنے مین بھرپور کردار ادا کر سکے کیونکہ بارڈر مینجمنٹ سٹریٹیجی پر موثر عملدرآمد کے لیے لاجسٹکس سمیت دیگر ضروریات وسائل اور جدید تربیت درکار ہے ۔ اور اس مقصد کے لیے نئی آسامیاںپیدا کرنے سے متعلق اسٹیبلشمنٹ ڈویژن اوراس کے لیے درکار اضافی فنڈز و بجٹ کے لیے خزانہ ڈویژن کی مشاورت ، ان پٹ بہت ضروری ہے لہذا درخواست کی جات ی ہے کہ اس حوالے سے خصوصی ہدایات جاری کی جائیں اور وزارت خزانہ اسٹیبلشمنٹ ڈویژن ، ایف بی آر حکام کے درمیان ملاقات کا انتظام کروایا جائے تاکہ اس بارے میں پیش رفت ہو سکے ۔ اس بارے میں ایف بی آڑ حکام سے رابطہ کیا تو انہوں نے بتایا کہ ایف بی آر کی کسٹمز ڈیپارٹمنٹ مانیٹرنگ سخت کردی ہے اور کرنسی کی نقل وحمل کی مانیٹرنگ و سمگلنگ روکنے کے لیے ڈآئریکٹریٹ آف راس بارڈر کرنسی موومنٹ قائم کرنے کے احکامات جاری ہو چکے ہین جس کا سرکلر بھی جاری ہو چکا ہے ۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More