Pak Updates - پاک اپڈیٹس
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

ن لیگ اور پیپلزپارٹی چیئرمین سینٹ کو ہٹانے پر متفق

اسلام آباد( حسنات ملک) پاکستان مسلم لیگ ن اورپاکستان پیپلزپارٹی چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی کو ان کے عہدے سے ہٹانے کے لیے متفق ہو گئی ہیں یہ اتفاق رائے گزشتہ دنوں بلاول اور مریم نواز کے مابین ملاقات کے دوران طے پایا ۔ صادق سنجرانی گزشتہ سال پاکستان پیپلزپارٹی اور تحریک انصاف کی حمایت سے چیئرمین سینٹ بنے تھے۔ انہوں نے 57 ووٹ لئے تھے جبکہ پاکستان مسلم لیگ کے راجہ ظفر الحق کو 46 ووٹ ملے تھے۔ اس وقت بھی پاکستان مسلم لیگ (ن) سینٹ میںسب س بڑی پارٹی ہے ۔ مسلم لیگ ن ،پیپلزپارٹی اور جے یو آئی ف کے سینٹ میں 46 ارکان ہیں۔ 29 آزاد سینیٹرز ہین جن میں بیشتر کا تعلق ن لیگ کے ساتھ ہے ۔ پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے دو سینیٹر ہیں ۔ اے ین پی ، فنکشنل لیگ اور بلوچستان عوامی پارٹی کے ایک ایک رکن ہیں۔ پی ٹی آئی کے ارکان کی تعداد 14 ،متحدہ قومی موومنٹ کے ارکان کی پانچ جبکہ جماعت اسلامی کے ارکان کی تعداد دو ہے ۔ سینٹ کو چلانے کے لئے چیئرمین کی اہمیت ہونے کے علاوہ وہ صدر پاکستان کی غیر موجودگی میں قائم مقام صدر کا عہدہ بھی سنبھالتے ہیں ۔ چیئرمین سینٹ کو ہٹآنے کے لیے 53 ارکان کی حمایت درکار ہے ۔ جو پاکستان مسلم لیگ ن ، پیپلزپارٹی ،جے یو آئی ف اور دیگر اپوزیشن جماعتیں مل کر آسانی سے پورے کر سکتی ہیں کیونکہ اے این پی پہلے ہی چیئرمین سینٹ کو ہٹآنے کا مطالبہ کر چکی ہے ۔ اے این پی کے رہنما زاہد خان کہہ چکے ہیں کہ چیئرمین سینٹ کو نہ ہٹایا گیا تو عاوم بلاول اور مریم نواز پر اعتماد نہیں کریں گے

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More