Pak Updates - پاک اپڈیٹس
پاکستان، سیاست، کھیل، بزنس، تفریح، تعلیم، صحت، طرز زندگی ... کے بارے میں تازہ ترین خبریں

بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں بگلیہارڈیم پر دریائے چناب کا مزید پانی روک لیا

1956ء میں سابق صدر جنرل ایوب خان دور میں بھارت کے ساتھ ہونے والے سندھ طاس معاہدہ کی خلاف ورزی کرکے بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں بگلیہارڈیم پر دریائے چناب کا مزید پانی روک لیا جس کی وجہ سے ہیڈمرالہ کے مقام پر دریائے چناب

سیالکوٹ (نیوز ڈیسک)1956: ء میں سابق صدر جنرل ایوب خان دور میں بھارت کے ساتھ ہونے والے سندھ طاس معاہدہ کی خلاف ورزی کرکے بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں بگلیہارڈیم پر دریائے چناب کا مزید پانی روک لیا جس کی وجہ سے ہیڈمرالہ کے مقام پر دریائے چناب کے پانی کی آمد بارہ ہزار پچاسی کیوسک سے تین ہزار نو سو چونتیس کیوسک کم ہوکر آٹھ ہزار ایک سو اکاون کیوسک رہ گئی جس کی وجہ سے دریائے چناب کا ستانوے فیصد سے زائد حصہ خشک ہوگیا اور ہیڈمرالہ سے نکلنے والی نہر مرالہ راوی لنک سوا تین ماہ سے زائد عرصہ سے مکمل طور پر بند رہی اورد وسری نہر اپرچناب میں پانی کا بہائو 25ہزار کیوسک سے کم ہوکر چھ ہزار ساڑھے پانچ سو کیوسک رہا اور پانی کمی کی وجہ سے سیالکوٹ ، پسرور ، نارووال ، سمبڑیال ، ڈسکہ اور گوجرانوالہ ودیگر اضلاع کی لاکھوں ایکٹر زرعی اراضی پر کاشتکار ٹیوب ویلوں کا پانی فصلوں کو لگانے پر مجبور رہے ، سندھ طاس معاہدہ کے تحت بھارت دریائے چناب میںپر لمحہ55ہزار کیوسک پانی چھوڑنے کا پابندتھا لیکن بھارت نے بیس سالوں سے زائد عرصہ سے دریائے چناب کا پانی مقبوضہ کشمیر میںبگلیہارڈیم تعمیر کرکے وہاں روک رکھا ہے ، ترجمان ایری گیشن کے مطابق مقبوضہ کشمیر سے آکر ہیڈمرالہ کے مقام پر دریائے چناب میں شامل ہونے والے دیگر دودریائوں دریائے مناور توی کے ایک ہزار دو سوپچیس کیوسک پانی اور دریائے جموں توی کے دو ہزار چوہتر کیوسک پانی کی وجہ سے دریائے چناب کے مجموعی پانی کی آمد گیارہ ہزار پانچ سو پچاس کیوسک رہی تاہم دریائے چناب کے پانی کی آمد آٹھ ہزار ایک سو اکاون کیوسک رہی ،

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments
Loading...

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More